خواہش کوئی بھی دل میں نہ لانا مرے لیے| urdu poetry sad 2 lines

best urdu ghazal | 2 line urdu poetry| urdu poetry text

0 7

خواہش کوئی بھی دل میں نہ لانا مرے لیے
للہ کبھی نہ اشک بہانا مرے لیے

فرط طرب سے خاک لحد بھی مری ہے نم
آیا ہے کوئی دوست پرانا مرے لیے

جب سلسلے رکے تو میں فاقوں پہ آ گیا
اس کے خطوط بھی تھے خزانہ مرے لیے

ہجرت کا درد  ترک محبت انا کا روگ
سارے بنے ہیں رنج توانا مرے لیے

آتا ہے یاد سن کے گلی میں ہوا کا شور
تیرا وہ گھر سے دوڑ کے آنا مرے لیے

یہ جان کر میں اور بھی بیمار ہو گیا
کرتا ہے بد دعا وہ روزانہ مرے لیے

تہمت لگا کے مجھ پہ زیادہ تو خوش نہ ہو
یہ کشٹ بھی ہے کھیل پرانا مرے لیے

خواہش کوئی بھی دل میں نہ لانا مرے لیے
للہ کبھی نہ اشک بہانا مرے لیے

شاعری: احسن اعجاز

وہ بار بار جو کہتا رہا جناب مجھے | سوال و جواب پر اردو غزلیہ شاعری

کبھی جو غم کے اندھیروں نے گھیر مارا مجھے

If you want to read more Urdu sad poetry please visit

urdu poetry sad| urdu poetry love| amazing urdu poetry| best urdu poetry in text| 2 line urdu poetry| urdu poetry 2 lines| urdu poetry love sad | urdu ghazal | 

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.