وحشت زدہ عجب سے خیالات کی طرف | urdu poetry sad 2 lines

urdu poetry text | urdu poetry broken heart |urdu poetry ghazal

0 15

وحشت زدہ عجب سے خیالات کی طرف
ہر ایک لمحہ ذہن ہے خدشات کی طرف

آئینہ دیکھتے ہوئے جاتا ہے اب دھیان
ویران وخستہ حال مقامات کی طرف

لائی جو ذات مجھ کو عدم سے وجود میں
مشکل پڑی تو دیکھا اسی ذات کی طرف

سالار ہوگیا ہے یہاں مبتلاۓ عشق
کیسے بڑھے سپاہ فتوحات کی طرف

اس شہر بد اماں کا خدا جانے کیا بنے
اک چیخ اٹھ رہی ہے سماوات کی طرف

لوٹا تھکن سے چور شکستہ بدن لیے
جانا ہوا تھا شہر طلسمات کی طرف

بازار کی دکاں سے خریدے گئے ہیں پھول
اک اور سانحہ ہے شروعات کی طرف

کاسے کی سمت کس نے یہ سکہ اچھالا ہے
ہر آنکھ ہے فقیر کی خیرات کی طرف

عاطر وہ شخص محو تکلم ہے جب تلک
کرتا ہے کون غور تری بات کی طرف

وحشت زدہ عجب سے خیالات کی طرف
ہر ایک لمحہ ذہن ہے خدشات کی طرف

شاعری: عمر عاطر

اگر آپ مزید اداس شاعری پڑھنا چاہتے ہیں تو یہ لازمی دیکھیں 

یاد کا اک حصار باقی ہے دو جہانوں کا بار باقی ہے | اداس شاعری

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.