یا رب ہے دعا تجھ سے ، طیبہ کا نگر دے دے | طیبہ پر اردو نعت

Best Urdu Naat Sharif

0 19

 

 

یا رب ہے دعا تجھ سے ، طیبہ کا نگر دے دے

گزرے جو مدینے میں ، وہ شام و سحر دے دے

 

نعتیں جو میں لکھتا ہوں ، آقا  کو سناؤں گا

اے میرے خدا مجھ کو پیارا یہ سفر دے دے

 

تیرا ہی سوالی ہوں ، تیرا ہی میں منگتا ہوں

سب میری دعاؤں میں ، اللہ اثر دے دے

 

آقا کی جدائی میں ، جو میں نے بہائے ہیں

اشکوں کا میرے اب تو ، تو مجھ کو ثمر دے دے

 

میں مسجد نبوی میں ، دن رات کو جاؤں اور

روضے پہ پڑے ہر دم ، پیاری وہ نظر دے دے

 

طیبہ میں ہی مر جاؤں ، پھر قبر بنے میری

خوش بختی ہے میری رب ، یہ موت اگر دے دے

 

اللہ اثر ڈالے ، اظہر کے کلاموں میں

جو دل میں اتر جائے ، مجھ کو وہ ہنر دے دے

 

یا رب ہے دعا تجھ سے ، طیبہ کا نگر دے دے

گزرے جو مدینے میں ، وہ شام و سحر دے دے

شاعری: ڈاکٹر محمد اظہر خالد

ہم نے دل جان سے آقا سے محبت کی ہے | اردو نعت شریف

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.