ہاتھوں میں ہاتھ دے کر دشمن کو مات دے دو

پاک فوج کی بہادری پر اشعار

3 39

ہاتھوں میں ہاتھ دے کر دشمن کو مات دے دو
پاک آرمی کا تم سب ہر دم ہی ساتھ دے دو

جغرافیائی سرحد کے سب ہیں یہ محافظ
ناکام کر کے سازش ہاتھوں میں ہاتھ دے دو

سردی و گرمی میں سب ہر جا پہ مستعد ہیں
ان کو خراج تحسیں دن اور رات دے دو

بحری و بری دستے عمدہ فضائی جتھے
توڑیں گے بت سبھی تم گر سومنات دے دو

کرتے ہیں یہ حفاظت پیارے وطن کی یارو
شہری آبادی ہو یا کوئی دیہات دے دو

تمغہ ملے شہادت مانگیں ہیں یہ سعادت
لالچ نہیں ہے چاہے تم کائنات دے دو

میری دعائیں اظہر پاک آرمی کے سنگ ہیں
میرے وطن کے لوگو تم سب بھی ساتھ دے دو

شاعری: ڈاکٹر محمد اظہر خالد

 

اگر آپ مزید مناجات، حمدیہ اشعار، نعت شریف یا  شان صحابہ پر کلام پڑھنا چاہتے ہیں تو یہ لازمی دیکھیں

 

 

3 تبصرے
  1. sklep online کہتے ہیں

    Wow, incredible blog format! How lengthy have you
    been running a blog for? you made running a blog
    look easy. The whole look of your website is excellent,
    as smartly as the content! You can see similar: najlepszy sklep and here sklep online

  2. e-commerce کہتے ہیں

    excellent points altogether, you just received a
    brand new reader. What could you recommend in regards to your publish that you
    made some days ago? Any positive? I saw similar here: dobry
    sklep and also here: e-commerce

  3. e-commerce کہتے ہیں

    If some one wants expert view regarding running a blog after that i propose him/her
    to pay a visit this web site, Keep up the pleasant work.
    I saw similar here: Sklep internetowy

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.