نادان اے مسلماں تو کتنا بے خبر ہے

0 24

نادان اے مسلماں تو کتنا بے خبر ہے
اک دن ہے تجھ کو مرنا مشکل ترا سفر ہے

دنیا کی الفتوں میں کیوں کر گِرا ہوا ہے
آ چل خدا کی جانب بہتر اسی کا در ہے

آتی ہیں قبر سے بھی ہردم یہی سداٸیں
غافل رہو نہ مجھ سے،یہ تیری رہ گزر ہے

ہے مال و زر کی چاہت اور حُبِّ غیر محرم
حُبِّ خدا سے دوری، عشقِ نبی کدھر ہے؟

شیطاں کی راہ چھوڑو مولا سے رشتہ جوڑو
کرلو پرہیزگاری ہشیار تو اگر ہے

عاصی سجاد، مولا! حاضر ہے تیرے در پر
آنکھیں جھکی ہوٸ ہیں، اپنا جھکایا سر ہے

نادان اے مسلماں تو کتنا بے خبر ہے
اک دن ہے تجھ کو مرنا مشکل ترا سفر ہے

شاعری: حافظ سجاد احمد

اگر آپ مزید حمدیہ اشعار، نعت شریف یا  شان صحابہ پر کلام پڑھنا چاہتے ہیں تو یہ لازمی دیکھیں

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.