براؤزنگ ٹیگ

poem islamic in urdu

نہایت قیمتی شب ہے  پٹاخے مت بجاؤ تم|شب برات پر اشعار

نہایت قیمتی شب ہے  پٹاخے مت بجاؤ تم فضیلت والی شب ہے یہ  نہ غفلت میں گنواؤ تم عبادت کے لئے رب نے  بنایا ہے تمہیں لوگو عبادت کے مواقع پر  عبادت ہی کماؤ تم یہ شعبان المعظم میں  مبارک رات آتی ہے نوافل سے تلاوت سے  اسے سارے سجاؤ تم…

رب کے خزانوں سے اک نعمت شب براءت | شبِ برات پر اشعار

رب کے خزانوں سے اک نعمت شب براءت پیارے خدا کی ہم پہ رحمت شب براءت راضی خدا کو کر لیں آنسو بہا بہا کر پیاری ملی ہے ہم کو ساعت شب براءت غفلت میں مت گنوانا اس قیمتی گھڑی کو مومن کے واسطے ہے دولت شب براءت قرآن کی تلاوت بڑھ چڑھ کے اس…

مدارس شریعت کی پہچان ہیں مساجد سکونِ دل و جان ہیں | دینی مدارس پر اشعار

مدارس شریعت کی پہچان ہیں مساجد سکونِ دل و جان ہیں درو و سلام اور نماز و اذاں تلاوت تہجد دعا ہو جہاں فرشتوں کی محفل سجی ہے وہاں یہ میرے پیغمبر کے فرمان ہیں رہو نیک اور اجر بھی پاؤ تم گناہوں سے بھی پاک ہو جاؤ تم…

خلوص آشنا بندہِ پارسا | حضرت عثمان رضی اللہ عنہ کی شان میں خوبصورت کلام

خلوص آشنا بندہِ پارسا ہوا جن سے راضی سبھی کا خدا کریں جن سے رب کے فرشتے حیا ہیں مشکل دنوں کے نبیؐ کے نوا جہاں میں سخاوت کے سلطان ہیں وہ عثمانؓ ہیں خوب انسان ہیں فقیروں کے سچے سہارے غنیؓ خلافت کے روشن ستارے غنیؓ نبی جی…

گھری ہوئی مصیبتوں میں قوم ِ مسلمان ہے | غمگین اردو شاعری

گھری ہوئی مصیبتوں میں قوم ِ مسلمان ہے عجیب تر زوال کی ہماری داستان ہے مگر ہمیں تو اپنے رب پہ اس قدر ایمان ہے گزر ہی جائے گا جو آج ہم پہ امتحان ہے ہمارے سینوں میں وہ جذبہ اذاں نہیں رہا قرآن تو وہی رہا مگر بیاں نہیں رہا وہ…

ہو کے شاہ نام فقیروں میں لکھانے والے | شان عمر فاروق رضی اللہ عنہ پر منقبت

ہو کے شاہ نام فقیروں میں لکھانے والے اشک ناکردہ گناہوں پہ بہانے والے شمعِ خانہِ کعبہ کو جلانے والے گردنیں ظلم کی دنیا میں اڑانے والے عالمِ ز����ست میں جو عدل کی پہچان ہوۓ حلقہِ رحمتِ عالم  میں ہی ذیشان ہوۓ شاملِ منصبِ…

تو رہا قبلہ ہمارا  تری عظمت ہے بہت | مسجد اقصی پر اشعار

تو رہا قبلہ ہمارا  تری عظمت ہے بہت ذکر قرآں میں ہے پایا تری برکت ہے بہت تیرے آنگن میں ملے رب کے پیغمبر سارے ہم کو معلوم ہے اقصی تری حرمت ہے بہت راہ تکتے تھے نبی سارے مرے آقا ﷺ کی ہم نے مانا ہے یہ اقصی تری ثروت ہے بہت لفظ سبحان…

دنیا سے جا رہے ہیں انسان دھیرے دھیرے | فکر آخرت پر کلام

دنیا سے جا رہے ہیں انسان دھیرے دھیرے ڈیرے ہوئے ہین سب کے ویران دھیرے دھیرے کیسے تھے شان والے کیسے تھے جان والے سب کھو رہے ہیں اپنی پہچان دھیرے دھیرے اللہ کو ہے بھلایا اس کے حبیب  کو بھی غفلت میں جا رہے ہیں نادان دھیرے دھیرے شہر…

نادان اے مسلماں تو کتنا بے خبر ہے

نادان اے مسلماں تو کتنا بے خبر ہے اک دن ہے تجھ کو مرنا مشکل ترا سفر ہے دنیا کی الفتوں میں کیوں کر گِرا ہوا ہے آ چل خدا کی جانب بہتر اسی کا در ہے آتی ہیں قبر سے بھی ہردم یہی سداٸیں غافل رہو نہ مجھ سے،یہ تیری رہ گزر ہے ہے مال و زر…