کسی کو سوچ رہا ہوں ، بہت اداس ہوں میں | اداس اردو شاعری

3 23

کسی کو سوچ رہا ہوں ، بہت اداس ہوں میں
یہ اور بات ہے مجمعے میں خوش لباس ہوں میں

زمانہ اپنی طرف کرنے کا ہنر ہے مجھے
اسے نہ پا سکا ، بد ذائقہ مٹھاس ہوں میں

کئی چراغ بجھا کر جلایا ہے خود کو
کسے خبر تھی اندھیرے کا انعکاس ہوں میں

نہ مجھ میں جھانک کے آنکھیں خراب کر لینا
میں اپنے آپ میں ہوں اور بے لباس ہوں میں

یہ منہ چھپانے کی عادت پڑی ہے کب تجھ کو
مرے ندیم ادھر دیکھ ! غم شناس ہوں میں

کسی کو سوچ رہا ہوں ، بہت اداس ہوں میں
یہ اور بات ہے مجمعے میں خوش لباس ہوں میں

شاعرٰ : عامر بلوچ

اگر آپ اداس شاعری پڑھنا چاہتے ہیں تو یہ لازمی دیکھیں 

بس ایک قطرہ ہوں میں کوئی جھیل تھوڑی ہوں | خوبصورت اردو شاعری

3 تبصرے
  1. e-commerce کہتے ہیں

    Wow, superb weblog format! How long have you ever been blogging for?
    you made running a blog glance easy. The overall glance of your website is great,
    as well as the content! You can see similar:
    najlepszy sklep and here e-commerce

  2. ecommerce کہتے ہیں

    This post is in fact a fastidious one it helps new
    net visitors, who are wishing in favor of blogging.
    I saw similar here: sklep internetowy and also here: ecommerce

  3. e-commerce کہتے ہیں

    Having read this I believed it was extremely informative.
    I appreciate you finding the time and energy to put this short article together.
    I once again find myself spending a lot of time both reading and
    leaving comments. But so what, it was still worth it!

    I saw similar here: E-commerce

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.