ہوئی ہم کو غلط فہمی بھروسہ تجھ پہ کر بیٹھے | اداس شاعری

1 78

ہوئی ہم کو غلط فہمی بھروسہ تجھ پہ کر بیٹھے
فدا ایسے ہوئے تجھ پہ کہ یاراں ہم تو مر بیٹھے

ملا جب سے ترا یہ آستاں ہم کو جبھی سے ہم
جھکائے اپنے ماتھے کو تری دہلیز پر بیٹھے

خبر پہلے سے تھی کہ تو ہمیں بے جان کر دے گا
ہمیشہ جان جانے کا تھا خطرہ ہم مگر بیٹھے

سنا تھا عشق میں عاشق بہت سے رنج اٹھاتا ہے
سو ہم بھی رنج کے مارے ہوئے ، پھر در بہ در بیٹھے

کبھی روئے کبھی روٹھے کبھی تڑپے کبھی ٹوٹے
نہ جانے درد کتنے ہی لیے ہم اپنے سر بیٹھے

تو واپس لوٹ آ دانش کہ تیری راہ کو تکتے
بڑے عرصے سے ہم تھامے ہوئے اپنا جگر بیٹھے

ہوئی ہم کو غلط فہمی بھروسہ تجھ پہ کر بیٹھے
فدا ایسے ہوئے تجھ پہ کہ یاراں ہم تو مر بیٹھے

اگر آپ مزید ادس شاعری پڑھنا چاہتے ہیں تو یہ لازمی دیکھیں

1 تبصرہ
  1. najtańszy sklep کہتے ہیں

    You’re in reality a excellent webmaster. This web site loading speed is amazing.
    It seems that you’re doing any unique trick. In addition, the
    contents are masterpiece. you’ve done a magnificent activity
    on this topic! Similar here: https://zaraco.shop and also here:
    Sklep internetowy

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.