ہم کو چاہت تھی کسی اور کی، آیا کوئی ہے | اردو شاعری محبت | Urdu poetry love

urdu poetry sad love | urdu poetry love poetry | urdu poetry 2 lines

0 13

ہم کو چاہت تھی کسی اور کی، آیا کوئی ہے
بس یہی غم ہے، بتا ! اس کا مداوا کوئی ہے ؟

تو پکار اپنے سبھی چاہنے والوں کو ابھی !
میں بھی دیکھوں کہ ترا میرے علاوہ کوئی ہے

ہم توکل کے سفیر اور امیدوں کے اسیر
ہم تو پوچھیں گے ترے دشت میں دریا کوئی ہے!

دل میں ہنستے ہوۓ آۓ تھے جو اب پوچھتے ہیں
اس خرابے سے نکل جانے کا رستہ کوئی ہے ؟

اب کہیں تیرا کوئی زخم نظر آتا نہیں
میں نہ کہتا تھا ترے پاس مسیحا کوئی ہے!

ایک درویش اٹھاۓ ہوۓ کوزے میں فرات
پوچھتا پھرتا ہے ہر ایک سے پیاسا کوئی ہے

ہم کو چاہت تھی کسی اور کی، آیا کوئی ہے
بس یہی غم ہے، بتا ! اس کا مداوا کوئی ہے ؟

شاعری: نعمان شفیق

اک رويہ تھا جو ‘روا’ نہ ہوا | اداس شاعری

If you want to read more Urdu poetry love please clicck 

urdu poetry love poetry | amazing urdu poetry | best urdu poetry in text | urdu poetry 2 lines | urdu poetry ghazal | Urdu poetry love

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.