ائے میرے دوست تجھے ہم سفر مبارک ہو | شادی پر اشعار

ایک دوست کی شادی پر لکھے گئے اشعار

2 2,971

ائے میرے دوست تجھے ہم سفر مبارک ہو
وجودِ رونقِ شام و سحر ۔۔۔۔۔۔۔۔مبارک ہو

کہ جس کے دم سے تری زندگی مہک اٹھے
درونِ خانہِ ہستی دمک دمک اٹھے

یہ راز تم پہ کھلے ہر سہانی صبح کے سنگ
"وجود ِزن سے ہے تصویر ِکائنات میں رنگ ”

وصال جس کا تری فکر کو جِلا بخشے
ہر ایک دکھ کو ہر اک درد کو دوا بخشے

ہر اک سفر میں ترے جو قدم ملا کے چلے
جو شہرِ درد میں رسمِ وفا نبھا کے چلے

خدا کی”رحمت و برکت” تمہارے گھر لائے
ویران صحنِ چمن کو” گلوں” سے بھر لائے

تمہارے راہ میں ہو ساتھ ہمسفر تیری
نہ سنگِ راہ بنے اور نہ پاؤں کی بیڑی

سکونِ قلب کی دولت ہو جس کے ہاتھوں میں
فروغِ ایماں کی لذت ہو جس کی باتوں میں

تمہاری روح”محبت” سے آشنا ٹھہرے
کہ تیرا راستہ جب”دین سے وفا” ٹھہرے

یہی دعا ہے کہ انجام تیرا بہتر ہو
کہ میرے رب کی یہ جنت ترا مقدر ہو

تمہارا خون کہ فردوس میں حِنا ٹھہرے
کہ تم شہید وہ حوروں کی ملکہ ٹھہرے

ائے میرے دوست تجھے ہم سفر مبارک ہو
وجودِ رونقِ شام و سحر ۔۔۔۔۔۔۔۔مبارک ہو

شاعری : سلیم اللہ صفدر

اگر آپ مزید شادی پر اشعار پڑھنا چاہتے ہین تو یہ لازمی دیکھیں

2 تبصرے
  1. عرفان صادق کہتے ہیں

    ما شاء اللہ ۔۔ بہت خوب۔۔۔

  2. dyskont online کہتے ہیں

    I see You’re in reality a good webmaster. This website loading velocity is amazing.
    It seems that you’re doing any unique trick. Moreover, the
    contents are masterpiece. you have performed a great
    activity on this subject! Similar here: dobry sklep and also here: Dyskont
    online

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.