شہر نبی میں آکر ، حسرت کو بھول جاؤ | نعت شریف

بارگاہ رسالت میں نعت رسول مقبول

1 25

شہر نبی میں آکر ، حسرت کو بھول جاؤ
ناداری اپنی کو بھی ، غربت کو بھول جاؤ

دنیا کے سب تماشے , عشرت کو بھول جاؤ
دنیا میں دل لگی اور ، رغبت کو بھول جاؤ

پیارے نبی  کی سنت ، پر ہی عمل کرو تم
آسانیاں سبھی ہیں ، عسرت کو بھول جاؤ

گر زندگی میں ان  کے ، رستے پہ نہ چلے تم
آرام بھی ہے رخصت ، راحت کو بھول جاؤ

الفت سے رہنا سیکھو ، دنیائے فانی میں اب
تم دل نہیں دکھانا ، نفرت کو بھول جاؤ

اللہ نبی  کے حکموں ، پر ہی کمائیاں کر
سود اور حرام خوری ، رشوت کو بھول جاؤ

اللہ نبی  منانے ، کی فکر میں لگو تم
اس کے سوا اے اظہر ، چاہت کو بھول جاؤ

شہر نبی میں آکر ، حسرت کو بھول جاؤ
ناداری اپنی کو بھی ، غربت کو بھول جاؤ

شاعری: ڈاکٹر محمد اظہر خالد

اگر آپ مزید مناجات، حمدیہ اشعار، نعت شریف یا  شان صحابہ پر کلام پڑھنا چاہتے ہیں تو یہ لازمی دیکھیں

درد دل کی دوا ذکر صلی علی | نعت شریف

1 تبصرہ
  1. dobry sklep کہتے ہیں

    Wow, awesome blog layout! How lengthy have you ever been running
    a blog for? you make blogging glance easy. The overall glance of your site is great, let
    alone the content! You can see similar here sklep

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.