خوف کے زہریلے پھن ہیں حوصلے کے آس پاس | خوبصورت اردو شاعری

5 20

خوف کے زہریلے پھن ہیں حوصلے کے آس پاس
یعنی نقصانات بھی ہیں فائدے کے آس پاس

یوں اندھیرے کی سلاخوں سے ہوا آزاد، دیپ
چند جگنو رکھ دیئے ہم نے دیئے کے آس پاس

مر کے بھی ہمسائگی باقی رہے، سو اک درخت
تم لگا دینا ہمارے مقبرے کے آس پاس

کیا زمانہ ہے دلوں کو توڑ کر بھی آدمی
مسکراتا پھر رہا ہے آئنے کے آس پاس

اک غزل کی یک بہ یک تقدیر روشن ہوگئی
اک غزل روتی رہی بنجر گلے کے آس پاس

میں نےانکی صرف اک تصویرکھینچی تھی کہ بس
تتلیاں ہی تتلیاں تھیں، کیمرے کے آس پاس

ایک شب اک روشنی نے خواب میں آ کر کہا
باوضو بیٹھا کرو روتے ہوئے کے آس پاس

خوف کے زہریلے پھن ہیں حوصلے کے آس پاس
یعنی نقصانات بھی ہیں فائدے کے آس پاس

شاعری: طاہر سعود کرتپوری

اگر آپ مزید اداس شاعری پڑھنا چاہتے ہیں تو یہ لازمی دیکھیں 

اس کی خوشیوں کی خاطر میں کتنی محنت کرتا ہوں

 

5 تبصرے
  1. sklep online کہتے ہیں

    Wow, amazing blog structure! How long have you been running a blog for?
    you made blogging glance easy. The entire look of your website
    is magnificent, let alone the content material! You can see similar: sklep internetowy and here sklep online

  2. e-commerce کہتے ہیں

    Everything is very open with a very clear description of the challenges.
    It was truly informative. Your website is extremely helpful.

    Thank you for sharing! I saw similar here: sklep online and also here:
    e-commerce

  3. sklep کہتے ہیں

    I pay a quick visit each day some web pages and
    blogs to read articles, except this web site offers quality based writing.
    I saw similar here: E-commerce

  4. sklep کہتے ہیں

    Hey there! Do you know if they make any plugins
    to help with Search Engine Optimization? I’m trying to
    get my blog to rank for some targeted keywords but I’m not seeing very good results.
    If you know of any please share. Thank you! You can read similar blog here:
    Sklep

  5. Analytics and social research کہتے ہیں

    It’s very interesting! If you need help, look here: ARA Agency

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.