مرے دیس کو اب یہ کیا ہو گیا ہے| اداس شاعری

4 34

مرے دیس کو اب یہ کیا ہو گیا ہے
قیامت سے پہلے قیامت بپا ہے

چلو ڈھونڈ لائیں مِرے یار پھر سے
خزانہءِ الفت کہیں کھو گیا ہے

کھلے بابِ عرفاں اسی پر ہمیشہ
مصائب کا جس نے کیا سامنا ہے

اسی لامکاں کے ہیں جلوے جہاں میں
کہیں پر جو مخفی کہیں رونما ہے

قسم جس کی کھائی خدا نے یقینًا
ہر اک زاویے سے وہ صورت جدا ہے

لہو سے تھا لَت پَت کٹہرے میں مجرم
کہا منصفوں نے یہ رنگِ حنا ہے

بنا ہوں میں باغی جو اہلِ ستم کا
اسی بات پر یہ زمانہ خفا ہے

کبھی دیکھ دشتِ انا سے نکل کر
گلستانِ الفت بڑا خوش نما ہے

مرے آنسوؤں کی نہیں کوئ قیمت
تو اتنا بتا دے مرا مول.کیا ہے؟

جسے تم سمجھتے ہو اپنا مسیحا
حقیقت میں وہ ایک بہروپیا ہے

بسیرا ہے ان کا دلِ پر ضیاء میں
انہیں اب تُو بابر کہاں ڈھونڈتا ہے

پلا برق سب کو تُو جامِ محبت
جو انسانیت کا بھلا چاہتا ہے

مرے دیس کو اب یہ کیا ہو گیا ہے
قیامت سے پہلے قیامت بپا ہے

شاعری : بابر علی برق

اگر آپ مزید اداس شاعری پڑھنا چاہتے ہیں تو یہ لازمی دیکھیں 

4 تبصرے
  1. sklep internetowy کہتے ہیں

    Wow, awesome weblog layout! How lengthy have
    you ever been running a blog for? you made blogging glance easy.

    The whole look of your website is wonderful, let
    alone the content! You can see similar: sklep internetowy and here sklep internetowy

  2. sklep internetowy کہتے ہیں

    After I originally commented I seem to have clicked the -Notify me when new comments are added- checkbox and from now on each time a comment is added I recieve 4
    emails with the same comment. There has to be a way you are able to remove me from that
    service? Thanks! I saw similar here: dobry
    sklep and also here: sklep internetowy

  3. e-commerce کہتے ہیں

    For most up-to-date information you have to pay a quick visit web and
    on internet I found this site as a finest web site for hottest updates.
    I saw similar here: Dobry sklep

  4. Buat Akun Pribadi کہتے ہیں

    Your article helped me a lot, is there any more related content? Thanks!

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.