بیعت تھی جان دینے کی اور تھا نبی کا ہاتھ | حضرت عثمان رضی اللہ عنہ کی شان میں کلام

منقبت حضرت عثمان | شان حضرت عثمان غنی | manqabat hazrat usman ghani lyrics

0 92

بیعت تھی جان دینے کی اور تھا نبی کا ہاتھ
اس ہاتھ کی طرف بڑھا فوراً سبھی کا ہاتھ

سلمان کا بلال کا بوزر ولی کا ہاتھ
شامل تھا ان ہی ہاتھوں میں مولیٰ علی کا ہاتھ

سب ہاتھ پورے ہوگئے پھر رب کے حکم سے
آقا نے اپنے ہاتھ کو بولا غنی کا ہاتھ

کھول آنکھ دیکھ دشمنِ عثمان کے لئے
آقا نے خود بلند کِیا دشمنی کا ہاتھ

جس نے کبھی بھی ستر کو مس تک کیا نہ ہو
تاریخ میں دکھاؤ تو ایسا کسی کا ہاتھ

اے ناقدانِ حضرتِ عثمان دیکھنا
گردن سے تم کو پکڑے گا اک دن نبی کا ہاتھ

عثمان وہ شہیدِ مدینہ ہے جس نے دوست
چالیس روز تھاما ہے تشنہ لبی کا ہاتھ

محشر میں سب کے سامنے توڑے گا کبریا
ہر سازشی و رافضی و خارجی کا ہاتھ

آقا ہیں آفتاب صحابہ ہیں روشنی
تحسین چھوڑنا نہ کبھی روشنی کا ہاتھ

بیعت تھی جان دینے کی اور تھا نبی کا ہاتھ
اس ہاتھ کی طرف بڑھا فوراً سبھی کا ہاتھ

شاعری:  یونس تحسین

لاڈلے سرورِ کونین کے عثمان رہے | حضرت عثمان کی شان پر اشعار

در بہ در مدحت سرکار سناتا ہوا میں | نعت شریف اردو شاعری

manqabat hazrat usman | manqabat hazrat usman ghani | manqabat hazrat usman ghani lyrics

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.