مسلمانو کہاں گم ہو ابھی رمضان باقی ہے | رمضان پر اشعار | Ramzan poetry

ramzan poetry in urdu text | ramzan poetry in urdu | ramdan poetry

0 16

مسلمانو کہاں گم ہو ابھی رمضان باقی ہے
خدا کی رحمتوں کا تو ابھی فیضان باقی ہے

نہ جاؤ چھوڑ کر مسجد کبھی بھی اے میرے بھائی
گناھوں کے تو بوجھوں کا ابھی خسران باقی ہے

جہاں پر رحمت رب کی فضائیں چھا چکی ھیں اب
یہ دل بھی کر لو زندہ کہ ابھی مسکان باقی ہے

نہ چھوڑو تم تراویح کو کسی بھی حال میں ہرگز
کہ منزل میں سنانے کو ابھی قرآن باقی ہے

نہ ہو جائے قضا کوئی بھی روزہ اے میرے بھائی
معافی بھی ملے سب کو ابھی ارمان باقی ہے

دعا ہے اس مہینے میں معافی سب کی ہو جائے
جہاں میں تو مہینوں کا ابھی سلطان باقی ہے

تلاوت بھی ہو صبح و شام ادا کر لو نوافل بھی
خدائے لم یزل کا تو ابھی احسان باقی ہے

منا لو رب کو اپنے اب عبادت سے سخاوت سے
کہ لاکھوں کی تو معافی کا ابھی اعلان باقی ہے

لگا لو دل تراویح میں کہ تحفہ ہے یہ اس ماہ کا
کہ سورہ واقعہ بھی ہے ابھی رحمان باقی ہے

دعا ہے یہ کہ اظہر بھی ہو سایہ عرش رحماں میں
قیامت کا وہ منظر بھی ابھی میزان باقی ہے

مسلمانو کہاں گم ہو ابھی رمضان باقی ہے
خدا کی رحمتوں کا تو ابھی فیضان باقی ہے

نہ جاؤ چھوڑ کر مسجد کبھی بھی اے میرے بھائی
گناھوں کے تو بوجھوں کا ابھی خسران باقی ہے

شاعری: ڈاکٹر محمد اظہر خالد

عبادت کا مہینہ آ گیا ہے | ماہ رمضان پر اشعار

If you want to read more ramzan poetry in urdu text, please visit

Ramzan poetry in urdu text| ramzan poetry in urdu | ramdan poetry | ramdan poetry in urdu | Amazing Urdu poetry | Urdu poetry best | Urdu poetry Islamic |

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.