میری روح و جاں کا قرار تھا| مرحوم والد پر شاعری

والد کی وفات کے بعد دنیا کے رنج و غم میں ڈوبے ایک بیٹے کے جذبات اپنے والد کے بارے میں |poetry about father death

4 1,891

میری روح و جاں کا قرار تھا، میری خواہشوں کا وقار تھا
یہ کڑکتی دھوپ ہے زندگی وہ شجر کہ سایہ دار تھا

وہ نہیں رہے میرے پاس اب تو یہ الجھنوں میں ہے زندگی
وہ تھے زندگی میں تو زندگی میں فقط سکون و قرار تھا

وہ جدا ہوئے تو خزاؤں نے مجھے شاخ شاخ تہی کیا
میرے ساتھ تھے وہ تو ہر چمن کی روش پہ رنگِ بہار تھا

جہاں گل کھلے تھے مسرتوں کے وہ چہرہ کتنا حسین تھا
جہاں دفن رہتا ہر ایک غم بھلا کس طرح کا دیار تھا

میرے سارے کھیل کھلونے تھے ، جو اگر تو ان کے ہی دم سے تھے
میری کامیابیوں عزتوں میں انہی کا دستِ وقار تھا

انہی بازوں میں تھی ہر خوشی، وہی سینہ تھا میری زندگی
کوئی چھو نہ سکتا تھا غم مجھے کہ وہ کیسا خوب حصار تھا

میرے مولا تو انہیں معاف کر کہ ہمیشہ ان کی ہو روح پر
تیرا رحم اتنا کہ جس قدر انہیں میری جان سے پیار تھا

میری روح و جاں کا قرار تھا، میری خواہشوں کا وقار تھا
یہ کڑکتی دھوپ ہے زندگی وہ شجر کہ سایہ دار تھا

فیس بک لنک

اگر آپ  ماں کی شان میں کلام یا بیٹی کی عظمت پر شاعری پڑھنا چاہیں تو یہ لازمی دیکھیں  

4 تبصرے
  1. sklep internetowy کہتے ہیں

    Wow, fantastic blog format! How lengthy have you been blogging for?
    you made blogging glance easy. The total look of your web site is magnificent, let alone the content material!
    You can see similar: sklep internetowy and here sklep internetowy

  2. sklep online کہتے ہیں

    WOW just what I was searching for. Came here by searching
    for ecommerce I saw similar here: sklep online and also here:
    sklep online

  3. sklep online کہتے ہیں

    I am genuinely grateful to the holder of this
    web page who has shared this enormous paragraph at at this time.
    I saw similar here: Sklep internetowy

  4. […] میری روح و جاں کا قرار تھا| مرحوم والد پر شاعری […]

جواب چھوڑیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.