براؤزنگ ٹیگ

hamd poem in urdu

سخن کا آغاز کر رہا ہوں حضورِ والا بہ اِسم اللہ | حمدیہ اشعار | hamd poetry 2 lines

سخن کا آغاز کر رہا ہوں حضورِ والا بہ اِسم اللہ تمام لفظوں میں ہورہا ہے عجب اجالا بہ اِسم اللہ بروزِ محشر اسی کے چہرے پہ ہوگا ایمان کا تبسم لیا ہے رزقِ حلال کا جس نے بھی نِوالہ بہ اِسم اللہ

میرا خدا بھی وہی ہے تیرا خدا بھی وہی | حمدیہ اشعار | best hamd poetry in urdu

میرا خدا بھی وہی ہے تیرا خدا بھی وہی وہ ہے اکیلا صمد سب سے ہے جدا بھی وہی جو پالتا ہے خلائق کو پتھروں میں بھی جو بھولتا نہیں چھوٹے سے مچھروں کو بھی جو کربلا میں سنبھالے بہتروں کو بھی جہان سارا اسی کا کمال ہے…

میرے مولا ازل سے تیری رحمت کا سہارا ہے| hamd poetry in urdu 2 lines

میرے مولا ازل سے تیری رحمت کا سہارا ہے میرا ہر گام ذلت میں میری کوشش خسارہ ہے تیری ہے بادشاہی اس جہاں میں اے میرے مولی میں ہر اک عمل میں قاصر تیری بس ذات بالا ہے اسی ماہ مقدس میں تیری رحمت کا غلبہ ہے میری بھی مغفرت کرنا جو میں نے…

اِدھر بھی خدا ہے، اُدھر بھی خدا ہے | حمدیہ اشعار اردو

اِدھر بھی خدا ہے، اُدھر بھی خدا ہے وہ سب سے بڑا ہے، وہ سب سے بڑا ہے شجر میں، ہجر میں، ہنر میں، نظر میں سفر میں، ظفر میں، دعا کے اثر میں خلإ میں، ہوا میں، ضیإ میں قمر میں وہی ہے جو ہر شے میں جلوہ نما ہے وہ جس…

لبوں پر ہے مِرے جاری تِری حمد و ثناء مولا | حمدیہ اشعار

لبوں پر ہے مِرے جاری تِری حمد و ثناء مولا نہیں کوئی تِرے جیسا مِرے مشکل کُشا مولا تُو ہی خالق، تُو ہی مالک، تُو سب کا پالنے والا عدم سے تُو نے ہی ہر چیز کو پیدا کیا مولا تجھے نبیوں نے ولیوں نے مُصیبت میں پُکارا ہے مصائب میں سبھی کا…

بول ہو کوئی زباں پر تو سدا تیرے لۓ | حمدیہ شاعری

بول ہو کوئی زباں پر تو سدا تیرے لۓ چپ رہے گر یہ زباں تو یاخدا تیرے لۓ مقصدِ ہستی مرا ہو تیری طاعت یاالٰہ لب پہ ذکرِ پاک ہو صبح و مسا تیرے لۓ ہے فقط تجھ پر مرا ایمان بھی ایقان بھی قلب میں کوٸ نہیں تیرے سوا، تیرے لۓ آسماں در آسماں…

دھنک، دھوپ، بارش، زمیں، آسماں میں شہنشاہِ عالم دکھائی دیا ہے | حمد باری تعالی

دھنک، دھوپ، بارش، زمیں، آسماں میں شہنشاہِ عالم دکھائی دیا ہے حسیں پربتوں میں، زمان و مکاں میں شہنشاہِ عالم دکھائی دیا ہے شجر میں، حجر میں، ضیإ میں، صبا میں قمر میں، بھنور میں، ہوا میں، خلا میں نگینوں کی رنگت، حسیں گلستاں…

وہ غم ڈھالے گا خوشیوں میں جو غم رب کو بتاؤ تو | حمدیہ اشعار

وہ غم ڈھالے گا خوشیوں میں جو غم رب کو بتاؤ تو پلٹ جائیں گے سب پانسے ذرا نظریں جھکاؤ تو لگے جو زخم دل پر مندمل کردے گا سب ہی وہ وضو اشکوں سے کرکے تم جو ہاتھوں کو اٹھاؤ تو یہ دنیا گر گرائے سب، وہ رب گرنے نہیں دےگا گرو جو سامنے اس کے،…